19

گولہ چوک،ریجنل پاسپورٹ آفیس،منی بائی پاس کی حیصیت کا حامل روڈ اہل علاقہ کے لیے وبال جان بن گیا

ڈیرہ مراد جمالی:رپورٹ حسین بخش سولنگی

گولہ چوک،ریجنل پاسپورٹ آفیس،منی بائی پاس کی حیصیت کا حامل روڈ اہل علاقہ کے لیے وبال جان بن گیا
محکمہ پبلک ہیلتھ زمہ داری قبول کرنے سے انکاری میونسپل کمیٹی پانی نکالتے نکالتے تھک گئی دونوں اطراف سے عوام ہوگئی پریشان،سخت سردی میں اہل علاقہ سراپا احتجاج


عرضہ دراز سے مین گولہ چوک،منی بائی پاس کی حیصیت رکھنے والی شہر کی خوبصورت سڑک کو ناجانے کس کی نظر لگ گئی سابق صوبائی وزیر میر عبدلماجد جاموٹ ہاوس،ریحنل پاسپورٹ آفس کی سڑک گزشتہ گئی سالوں سے تالاب کا منظر پیش کررہی ہے آئے روز سیوریج کا پانی اور محکمہ پبلک ہیلتھ اینڈ انجنیئرنگ کی بیجھائی گئی پائپ لائن کے ٹوٹ پھوٹ جانے سے پانی سڑک پر آجاتا ہے

اور ہفتوں کے ہفتوں پانی سڑک پر ہی کھڑارہتا ہے جس سے راہگیروں کو شدید مشکلات کا سامنہ ہے اور آس پاس کی آبادی شدید متاثر ہورہی ہے آئے روز پانی سڑک پر آجانے کے بعد لوگوں کے گھروں میں داخل ہوجاتا ہے جسکی وجہ سے لوگوں کے گھر وں شدید نقصان پہنچ رہا ہے شہریوں نے پی ایچ ای اور میونسپل کمیٹی کی مبینہ غفلت اور نااہلی کے خلاف سخت سردی سراپا احتجاج بن گئے سخت سردی میں شہری انتظامیہ پر گرم ہوئے اور گولہ چوک پر شدید احتجاج کیا شہریوں کا کہنا تھا کے آئے روز سیوریج کا پانی سڑک پر آجاتا ہے

اور ساتھ ساتھ پی ایچ ای کی نااہلی سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار پائپ لائن سے بہنے والا پانی مل جاتے ہیں اور ہم سیوریج ملا پانی پینے پر مجبور ہیں جس کے باعث ہم موزی امراض میں مبتلا ہوچکے ہیں احتجاج کے شرکاء نے موجودہ ایم پی اے نصیرآباد میر سکندر خان عمرانی ضلعی انتظامیہ اور صوبائی حکومت سے اپیل کی ہیکہ سیوریج کے ناقص نظام کو بہتر بنایا جائے اور محکمہ پی ایچ ای کی نااہلی کا نوٹس لیکر بوسیدہ پائپ لائن کی مرمت کی جائے تاکے شہری سکھ کی سانس لے سکیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں