54

سوشل میڈیا پر پولیس کے شریف آفیسران پر بحتان لگائے جانے لگے

ڈیرہ مراد جمالی
تردیدی بیان: فلاحی اداروں کا کام عوامی فلاح ہونی چاہیے ناکہ مجرمان کی سرپرستی کرنی چاہیے ایس ایچ او فلیجی

میرے خلاف سوشل میڈیا پر پروپیکنڈا کیا گیا جس کی میں تردید کرتا ہوں ایس ایچ او فلیجی ایس ایچ او فلیجی محمد علی نے تردیدی بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہیکے گزسشتہ دنوں سوشل میڈیا پر میرے خلاف پروپیگنڈا کیا گیا 302میں نامزد ملزمان کو سوشل میڈیا پر لایا گیا جو کے فراری ملزم ہیں میرے خلاف کی گئی انکی باتیں سوشل میڈیا پر غیر سنجیدہ لوگوں نے اپلوڈ کر رکھی ہیں

جنکی میں تردید کرتا ہوں اور یے بات واضع کرتا ہوں کے جو لوگ سوشل میڈیا کا سہارا لیکر میرے خلاف باتیں کررہے ہیں اور مجھ پر سنگین الزام لگارہے ہیں وہ سراسر جھوٹ ہیں جن میں کوئی صداقت نہیں ہے میں ایز آ ایس ایچ او پولیس تھانہ فلیجی میں اپنے فرائض انجام دے رہا ہوں گزشتہ دنوں ہونے والے قتل کے ملزمان کے خلاف وارنٹ گرفتاری میرے پاس موجود ہیں جنہیں گرفتار کرنے کے لیے میں نے اعلی آفیسران کی خصوصی ہدایت پر ریڈ کی مگر ملزمان فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ایف آئی آر میں نامزد ملزمان کی گرفتاری کے لیے جتن کیے جارہے اوربہت جلد وہ قانون کے گرفت میں ہوں گے

ملزمان کے خلاف مقدمات اور تمام تر ثبوط میرے پاس ہیں سوشل میڈیا پر کسی کی عزت نفس مجروع کرنا قابل مزمت عمل ہے ایسے غیرسنجیدا لوگوں کو احتیاط سے کام لینا چاہیے ملزمان کی ویڈیو بناکر سوشل میڈیا کی زینت بنانے والوں سے میں پوچھتا ہوں کے جن ملزمان کی وہ ویڈیوز بناکر اپلوڈ کررہے تھے وہ تو 302 میں ہمیں مطلوب ہیں ان ایڈمینز کو ان مجرمان تک رسائی حاصل ہے اگر یے لوگ ملزمان نہیں لاتے تو اگے چل کر ایسے عناصر کو بھی شامل تفتیش کیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں